کوئٹہ ایک بار پھر خون میں لت پت

سول ہسپتال حملے میں اب تک  42 ہلاکتیں ہوچکی ہیں جن میں وکلاء اور کئی صحافی حضرات شامل ہیں ۔اس خوفناک خودکش حملے سے 50 سے زیادہ افراد زخمی ہوچکے ہیں۔ یہ حملہ اس وقت وقوع پزیر ہوا جب ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بننے والے سابق بار صدربلوچستان انور کاسی کو ہسپتال لایا گیا ۔

پیر کی صبح منوجان روڈ مینگل چوک کوئٹہ پر سابق بار صدر کی کار پر انجاں مسلحہ افراد نے جان لیوا حملہ کیا جب مقتول کو وکلاء اور صحافیوں کے ہمراہ ہسپتال لایا گیا تو وہاں پر خود کش حملہ کردیا گیا۔

صدر اور وزیرِ اعظم کا اظہارِ افسوس

سابق صدر با ر اور دوسری جملہ ہلاکتوں پر وزیرِ اعظم اور صدر نے گہرے دکھ کا اظہار کیا ۔ وزیرِ اعظم نے کہا کہ کسی بھی شخص کو صوبے کے امن و امان سے کھیلنے کی اجازت نہ دی جاۓ گی۔

Views All Time
170
Views Today
1
(Visited 43 times, 1 visits today)

One Comment

  1. Hassan Mujtaba

    We’re with you quetta :(

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

9 + 3 =